اسٹاک مارکیٹ 100انڈیکس میں 6فیصد اضافہ، مارکیٹ معطل کرنے کے بعد کھول دی گئی،

شرح سود میں کمی، آئی ایم ایف سے قرضہ کی منظوری ، جی 20کی طرف سے مراعات، کنسٹرکشن سیکٹر کے لیئے پیکیج، اسٹاک مارکیٹ انویسٹرز میں خوشی کی لہر دوڑ گئی، پاکستان اسٹاک ایکسچینج کے100انڈییکس میں 5فیصد سے زائد اضافہ ہوا جس کے بعد مارکیٹ ایک گھنٹے معطل کی گئی، مارکیٹ کھلنے کے بعد مزید تیزی دیکھی جارہی ہے

مارکیٹ کا 100انڈیکس1ہزار544پوائنٹس میں اضافےکے بعد 32ہزار 874پوائنٹس پرپہنچا تو مارکیٹ ایک گھنٹے کے لیئے معطل کرنی پڑی۔ مارکیٹ ایک گھنٹہ بند رکھنے کے بعد جب کھولی گئی تو پھر تیزی کا رحجان تھا اور انڈیکس 33ہزار کی نفسیاتی حد عبور کرگیا۔ ابتک انڈیکس میں 6فیصد اضافہ ہوچکا ہے اور انڈیکس 33ہزار 200سے زائد پر ٹریڈ کررہا ہے

مارکیٹ میں اب تیزی ہی رہنی ہے اس لیئے ہر شیئر میں خریداری کا رحجان ہے، ایک اسٹاک مارکیٹ بروکر نے کہا کہ سیمنٹ سیکٹر سب سے زیادہ فائدہ اٹھائے گا کیونکہ کنسٹرکشن سیکٹر کے پیکیج سےسیمنٹ کی طلب میں اضافہ ہوگا تاہم شرح سود میں کمی سے بینکوں کے شیئرز میں کمی کا رحجان دیکھا جاسکتا ہے۔

فرٹیلائزر سیکٹر میں بھی تیزی متوقع ہے کیونکہ زرعی سرگرمیوں کی اجازت دیدی گئی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں