عالمی ادارہ صحت کے لیئے امریکی کم کردی، یو این میں چین کا کردار کم کرنے کی کوششیں

ورلڈ ہیلٹھ آرگنائزیشن کے لیئے دی جانے والی امریکی امداد صدر ٹرمپ نے بند کردی۔ امریکا نے گذشتہ سال 400ملین ڈالرز یعنی چالیس کروڑ ڈالرز امداد عالمی ادارہ صحت کو دی تھی۔ صدر ٹرمپ کا کہنا ہےکہ عالمی ادارہ صحت نے چین میں اٹھنے والی کرونا وائرس کی وبا کی سنگینی کو چھپایا۔ ڈبلیو ایچ او نے چین کے کہنے پر ابتدائی طور پر اس وبا کے لیئے جاری اعلامیہ واپس لیا تھا یہ اقدام تائیوان کی طرف سے بار بار دی جانے والی وارننگ کے باوجود کیا گیا۔ تائیوان نے ڈبلیو ایچ او کو اطلاع دی تھی کہ یہ وبا پھیل رہی ہے۔لیکن چین کی مداخلت پر ڈبلیو ایچ او نے دی گئی وارننگ واپس لے لی تھی

چین کوحاصل فوقیت کی وجہ سے ڈبلیو ایچ او نے تائیوان کی بات نہیں سنی۔ اسی لیئے صدر ٹرمپ نے ڈبلیو ایچ او کے معملات کا جائزہ لینے کا کہا ہے۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ چین کے دباو کی وجہ سے تبدیل کیئے جانے والے فیصلے نے چین کی پوزیشن کمزور کردی ہے۔ امریکا ہر صورت میں چین کا اقوام متحدہ میں کردار کم کرنے کی بھرپور کوشش کرے گا تاکہ آئندہ ایسی کسی وبا یا ناگہانی آفت کے سبب کسی کا دباو کام نہ آسکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں