یہ نہیں کہا کرسی مضبوط ہے، وزیراعظم کا اسمبلی میں دھواں دھار خطاب،کرسی آنے جانے والی چیز ہے

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک):وزیراعظم عمران خان نے قومی اسمبلی میں آج دھواں دھار تقریر کرتے ہوئےکہا کہ انہوں نے کبھی نہیں کہا کہ ہماری حکومت نہیں جانے والی ہے یا کرسی مضبوط ہے۔ وہ حال ہی میں اتحادیوں اور ارکان اسمبلی سے ہونے والی ملاقات سے منسوب خبر کا حوالہ دے رہے تھے جس میں وزیراعظم کو منسوب کرکے کہا گیا تھا کہ ان کی حکومت نہیں جائے گی کیونکہ کوئی اور چوائس نہیں ہے۔

وزیراعظم نے کہا : “وزیراعظم عمران خان “میں نے یہ نہیں کہا کہ ہماری حکومت نہیں جانے والی یا یہ نہیں کہا جیسے کہ کوئی کہتے تھے کہ کرسی بڑی مضبوط ہے۔کوئی مضبوط نہیں ہوتا۔اللہ پر ہوتا ہے۔ آپ آج ہیں کل نہیں ہیں۔میں اپنے خرچے خود اٹھاتا ہوں کہ کرسی چھوڑنے کی فکر نہ ہو۔ مجھے دباو میں نہ لے سکیں۔نوجوان ارکان اسمبلی سے کہتا ہوں کرسی چھوڑنےسے نہیں گھبرانا چاہیے کرسی آنے جانے والی چیز ہے”

وزیراعظم نے اپنے خطاب میں اپوزیشن پر کڑی تنقید کرتے ہوئے اس تاثر کو ختم کیا کہ شاید حکومت کو کسی قسم کا خطرہ درپیش ہے۔

انہوں نے خواجہ آصف کا نام لیئے بغیر کہا کہ یہ وزیردفاع وزیرخارجہ وزیر پیدوار تھے اور دبئی کی کمپنی سے پندرہ لاکھ روپے لیتے تھے۔ وزیراعظم نے کہا کہ یہ رقم تن خواہ نہیں کچھ اور تھا۔

وزیراعظم نے ایف بی آر اور کمپیٹیشن اتھارٹی پر شوگر مافیا کے ساتھ ملی بھگت کرنے کا الزام بھی لگایا۔ ان کا کہنا تھا کہ انہیں کہا گیا کہ شوگر مافیاحکومت گرادے گی۔ پی آئی اے کی رپورٹ کے لیئے کہتے تھے کہ دبا دو۔ انہوں نے کہا کہ دباو میں آئے بغیر رپورٹیں جاری کی گئیں۔

انہوں نے اسٹیل مل کی نجکاری سمیت تمام اداروں کے اندر اصلاحات پروگرام چلانے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ اصلاحاتی پروگرام نہیں چلائیں گے تو ملک کو مزید نقصان ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں