اسٹاک ایکسچنج پر دہشتگردوں کا حملہ ناکام،بی ایل اے نے ذمہ داری قبول کرلی، بھارت کی ممبئی جیسا حملہ کرنے کی ناکام کوشش؟

کراچی مانیٹرنگ ڈیسک: پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر دہشتگردوں کا حملہ ناکام بنادیا گیا۔ چار دہشتگردوں میں سے دو کو سیکوریٹی گارڈ نے دروازے پر ہی مار دیا۔ دو دہشتگرد کو مزید آگے بڑھنے پر گولیاں مارد۔ دہشتگردوں کی فائرنگ سے ایک پولیس افسر اورچار سیکوریٹی گارڈز شہید ہوئے۔ریجنل سیکوریٹی ایڈوائرز کا کہنا ہے کہ بھارت نواز بی ایل اے نے ذمہ داری قبول کی ہے

صبح دس بجکر پانچ منٹ پر چار دہشتگرد ریلوے گراونڈ کی پارکنگ سے اسٹاک مارکیٹ کے احاطے میں داخل ہوئے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق دہشتگردوں نے ہینڈ گرنیڈ پھینکا پھر فائرنگ کی لیکن سیکوریٹی پر موجود گارڈز، پولیس اور رینجرز نے فوری طور پر جواب دیا جس کے نتیجے میں دو دہشتگرد اسی جگہ مارے گئے دو دہشتگرد بھاگے جنہیں بھی ماردیا گیا۔

اسٹاک مارکیٹ کے ممبر عابد علی حبیب نے جیونیوز چینل کو بتایا کہ فائرنگ کی آوزیں سنتے ہی سارے لوگ مختلیف دفاتر میں گھس گئےاور سب ممبرز نے اپنے دروازے بند کردئے تاکہ کوئی دہشتگرد ان کے دفتر میں داخل نہ ہوسکے۔

ایم ڈی اسٹاک ایکس چینج فرخ خان کا کہنا ہے کہ مارکیٹ کو واضع پیغام دیا ہے کہ ہمیں کمزور نہیں کیا جاسکتا ۔ اسٹاک مارکیٹ کام کرتی رہی۔ اسٹاک مارکیٹ کے لیئے جو سیکوریٹی پلان تھا وہ کامیاب ثابت ہوا۔ اسٹاک مارکیٹ میں اس دوران ٹریڈنگ متاثر نہیں ہوئی۔ کچھ دیر کے لیئے شیئرز کی قیمتیں کم ہوئیں لیکن جیسے ہی دہشتگردوں کے مارے جانے کی خبر نشر ہوئی ویسے ہی مارکیٹ میں پھر خریداری شروع ہوگئی۔

بھارت کا کردار

اس حملے میں بھارت نواز بی ایل اے نے ذمہ داری قبول کی ہے۔ خطے کی سیکوریٹی پر نظر رکھنے والے ریسرچ ہاوس ریجنل سیکوریٹی ایڈوائزر کے ٹوئٹر اکاوئنٹ پر کہا گیا کہ بی ایل اے کے مجید گروپ نے اسٹاک مارکیٹ پر حملہ کیا ہے۔

اسٹاک مارکیٹ پر حملے کی مماثلت ممبئی حملے سے ملتی ہے۔ چار دہشتگرد اسٹاک ایکسچینج پہنچے جن سے ملنے والا سامان اور اسلحہ سے لگتا ہے کہ وہ اسٹاک مارکیٹ پر قبضہ کرنا چاہتے تھے۔ لیکن وہاں موجود سیکوریٹی اداروں نے اس حملے کو ناکام بنادیا اس طرح بھارت نواز تنظیم کی کوشش یکسر ناکام ہوگئی۔ بی ایل اے کو بھارت سے مدد ملنے کے ثبوت پاکستان کئی بار منظر عام پر لاچکا ہے۔ بھارت نواز گروپ اس سے پہلے نومبر دوہزار اٹھارہ میں چینی سفارتخانے پر بھی چاردہشتگردوں نےحملہ کیا تھا جنہیں موقع پر ہی ماردیا گیا تھا۔

بی ایل اے کو امریکا نے دہشتگرد تنظیم قرار دیا ہے۔ بی ایل اے کو افغانستان ا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں