خارجہ محاذ پر وزیراعظم کے حملے جاری، نریندر مودی کو نفسیاتی مریض کا خطاب دیدیا

اسلام آباد: وزیراعظم نے آزاد کشمیر میں خطاب کرتے ہوئے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو نفسیاتی مریض قرار دیدیا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ شخص گجرات میں مسلمانوں کا قاتل ہے

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ گجرات میں مودی نے تین دن تک پولیس اور سرکاری اداروں کو مداخلت سے روکا اور ایک لاکھ سے زائد مسلمان قتل کروائے، بے گھر کروائے اور خواتین کا ریپ کروایا۔ اس کا اب یہی پلان کشمیر کے لیئے ہے۔ یہ شخص سائیکو پاتھ ہے اور اس کی پارٹی کی پالیسی وہی ہے جو ہٹلر کی پارٹی کی پالیسی تھی۔

وزیراعظم عمران خان اکثر بھارتی وزیراعظم نریندر مودی پر براہ راست حملے کرتے ہیں۔ دونوں رہنماوں کےد رمیان تعلقات مسلسل کشیدہ ہیں۔ اس کشیدگی کی وجہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی ہے۔ پاکستانی وزیراعظم نے برسر اقتدار آتے ہی دونوں ملکوں کے درمیان بہتر تعلقات کے لیئے ایک خط بھارتی وزیراعظم کو لکھا لیکن پاکستان کی کوششوں کے جواب میں بھارتی وزیراعظم نے پاکستان کے خلاف کئی محاذ کھول دئے جن میں ایف اے ٹی ایف، سرحد پر گولہ باری شامل ہیں۔ مودی کی ہٹ دھرمی کے بعد پاکستانی وزیراعظم نے اپنا رویہ تبدیل کیا اور براہ راست بھارتی وزیراعظم کو نشانہ بنانے لگے۔ وہ جب وزیراعظم نہیں تھے اور اسلام آباد میں دھرنا دیا ہوا تھا اس وقت بھی نریندر مودی کو گجرات کا قصائی اور قاتل پکار چکے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں