حکومت کی نوکریاں بچاو اسکیم، جے ایس بینک، حبیب بینک اور بینک الحبیب سب سے زیادہ قرضے دیکر سرفہرست، نیشنل بینک کی خراب کارکردگی

سید رضوان عامر کراچی سے: حکومت نے کمپنویں کے لیئے روزگار ری فنانس اسکیم شروع کی جس میں کمپنیاں صرف تین فیصد پر قرضے لیکر ملازمین کی تنخواہیں دیں لیکن اس ضمانت کے ساتھ کہ تین ماہ تک کسی کو نوکری سے نہیں نکالیں گے، اس اسکیم میں سب سے زیادہ قرضے جے ایس بینک، حبیب بینک اور بینک الحبیب نے دیئے جبکہ نیشنل بینک نے اس اسکیم میں قرضے دینے والی کی فہرست سب سے نیچے ہے۔

اسٹیٹ بینک کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق جے ایس بینک نے تین ارب اٹہتر کروڑ روپے کے قرضے140کمپنیوں کو دیئے، حبیب بینک 3ارب62کروڑ روپے کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہا حبیب بینک نے مجموعی طور پر یہ رقم 102درخواستگازروں کو دی۔ بینک الحبیب نے سب سے زیادہ قرضے کی درخواتیں منظور کی ہیں بینک الحبیب 179درخواستوں کو منظور کرکے 3ارب 9کروڑ روپے سے زائد رقم تقسیم کی۔

اس اسکیم میں سرکاری بینک نیشنل بینک کی کارکردگی سب سے خراب رہی اس نے صرف 12قرضے کی درخواتیں منظور کی ہیں اور صرف 11کرور 49لاکھ روپے کے قرضے جاری کئے

اسٹیٹ بینک کے مطابق اس اسکیم کے تحت 12جون تک ملک کے بائیس بینکوں نے 107ارب 50کروڑ روپے کے قرضوں کی منظوری دی ہے۔

اسٹیٹ بینک کی تفصیلی رپورٹ کا لنک

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں