امریکا، لاہور اور کراچی کے ڈاکٹرز کرونا وائرس کے متاثرین کو کن دواوں، غذاوں سے صحتیاب کرر ہے ہیں؟ جانیئے اس خبر میں

لاہور: اگر آپ کرونا وائرس کا شکار ہیں یا آپ چاہتے ہیں کہ کرونا وائرس آپ کا کچھ نہ بگاڑے تو اس کے لیئے ڈاکٹروں نے تین حل تجویز کیئے ہیں۔ ہم یہ تحریر دو ایسے افراد کے تجربے کی بنیاد پر لکھ رہے ہیں جو کرونا سے کامیابی سے لڑ چکے ہیں

لاہور سے لیفٹ کے سینئر رہنما فاروق طارق نے اپنی ویڈیو میں بتایا کہ کرونا ہوجائے تو کیا بنیادی اقدامات کیئے جائیں جس سے آپ تیزی سےصحتیاب ہوتے ہیں

پیرا سیٹامول، یا پیناڈول کھائیں، زیادہ تر ڈاکٹر یہی دوا تجویز کررہے ہیں ۔ایزومیس دوا تجویز کی ۔زیادہ سے زیادہ فروٹ کھائیں ، چاول سے پرہیز کریں اور روٹی کھائیں، سوپ پیئیں۔ خالی پیٹ نہ رہیں۔

ایک خاتون جوکراچی میں نجی شعبہ سے وابستہ ہیں (نام خاتون کی درخواست پر نہیں دیا جارہا)۔ ان خاتون کو کرونا ہوا اور وہ صحتیاب ہوگئیں۔ انہیں بھی ڈاکٹرز نے وہی نسخہ دیا جو فاروق طارق کو لاہور میں دیا گیا۔ انہیں پیرا سیٹامول کھانے کا کہا گیا۔ سانس کے لیئے ایک اور دوا مائیٹیکا تجویز کی ۔ زیادہ سے زیادہ فروٹ کھانے کا کہا۔ وٹامن سی اور ڈی کھانے کا کہا جس میں سی اے سی ایک ہزار تجویز کی گئی۔ کھانا پیٹ بھر کر کھانے کے لیئے کہا گیا

فاروق طارق کی ویڈیو ان کی فیس بک پر دیکھی جاسکتی ہے

ایک امریکن پاکستانی طالبہ (جن کا نام ان کے کہنے پر نہیں بتایا جارہا)جو بوسٹن میں مقیم ہے اس پر کرونا کے اثرات نمودار ہوئے تو بوسٹن کے اسپتال کے ڈاکٹرز نے ٹیسٹ کیئے کرونا پوری طرح تو نہیں ہوا تھا لیکن ابتدائی علامات تھیں۔ امریکی ڈاکٹرز نے بھی سانس بحال رکھنے کی دوا، پیناڈول اور بہت سے فروٹ کھانے کا کہا ساتھ میں وٹامن سی اور ڈی تجویز کیئے ہیں

ان تینوں افراد کی ٹریٹمنٹ سے ثابت ہوتا ہے کہ فی الحال ڈاکٹرز کی توجہ قوت مدافعت بڑھانے اور وائرس کی طاقت کم کرنے میں ہے۔

ایک اور اہم بات جو فاروق طارق نے اپنی ویڈیو میں بتائی وہ تھی کرونا وائرس سے نفسیاتی جنگ۔ اگر یہ سوچ کر کرونا وائرس کا مریض بیٹھ جائے گا کہ اب میں نہیں بچوں گا تو پھر اس کی شکست ہوجاتی ہے۔ کرونا وائرس ایک بیماری ہے اور اس کوشکست لڑ کر ہی دی جاسکتی ہے۔

لیکن زیادہ سے زیادہ فروٹ کھانا، خوراک پوری کھانا اور وٹامن کا استعمال کرونا سے بچنے کابھی علاج ہے۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہےکہ اگر آپ کی قوت مدافعت مضبوط ہے تو آپ کرونا سے متاثر نہیں ہوں گے اور اگر کرونا کا وائرس آپ کو لگے گا تو بھی آپ اس سے جیت جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں