زرعی ترقیاتی بینک نے وزیراعظم کی پالیسی ہوا میں اڑا دی۔ ملازمین کی برطرفی کا سلسلہ جاری

اسلام آباد: زرعی ترقیاتی بینک نے پینتیس مزید ملازمین کو نوکری سے نکال دیا ہے۔ یہ ایسے وقت میں کیا گیا جبکہ وزیراعظم مسلسل ہدایت کررہے ہیں کہ ملازمین کو برطرف نہ کیا جائے۔

ذرائع کے مطابق ہیڈ آفس، زونل آفسسز سے مینجر جونیئر مینجر اور اسٹنٹ مینجرز سمیت پینتیس مزید افراد کو نوکری سے برطرف کیا گیا ہے۔زرعی ترقیاتی بینک ابتک سو کے قریب ملازمین کو بیروزگار کرچکا ہے۔

زرعی ترقیاتی بینک نے برطرفیوں کا سلسلہ اس وقت شروع کیا ہے جب وزیراعظم نے لوگوں کو ملازمتوں پر برقرار رکھنے کی پالیسی جاری کی ہے۔ اس کے لیے کمپنیوں بینکوں مالیاتی اداروں کے لیئے خصوصی مراعاتی پیکیجز کا بھی اعلان کیا گیا ہے۔ تاہم زرعی ترقیاتی بینک کی انتظامیہ نے اس پالیسی کو ہوا میں اڑا دیا ہے اور ملازمین کو مسلسل نوکریوں سے نکال رہے ہیں

دلچسپ بات یہ ہے کہ وزیراعظم نے پندرہ مئی شوکت ترین کی سربراہی میں تین رکنی ایڈوائزری کمیٹی زرعی ترقیاتی بینک کے لیئے بنائی ہے جس میں زبیر سومرو اور عاطف بخاری شامل ہیں۔ اس کمیٹی کا مقصد بینک کی ری اسٹرکچرنگ اور اصلاحات کرنا ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں