شاپنگ مال کھلنا شروع ہوگئے،کرونا کی وبا کا پھیلنے سے روکنا بڑا چیلنج بن گیا

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو حکم دیا ہے کہ تمام شاپنگ مالز فوری طور پر کھولے جائیں جبکہ چھوٹی مارکیٹیں بھی ہفتے اور اتوار کو کھولی جائیں

چیف جسٹس جسٹس گلزار احمد نے ازخود نوٹس کی سماعت کے دوران وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو شاپنگ مالز کھولنے کی ہدایت کی۔ انہوں نے سماعت منگل تک ملتوی کردی۔ چیف جسٹس نے ہفتہ اتوار کو مارکیٹیں بند رکھنے کی پالیسی پر سوال اٹھائے اور اس فیصلے کو غلط قرار دیا۔ صوبائی حکومتوں نے چھوٹی مارکیٹیں پیر سے جمعہ تک کھلی رکھنے کی پالیسی اپنائی تھی۔

چیف جسٹس کے فیصلے کے بعد صوبائی حکومتوں نے فوری طور پر شاپنگ مالز کھولے کے حکم نامے جاری کردیئے ہیں۔ آج سے ملک کے تمام بڑے شاپنگ مالز جن میں کراچی کا ڈولمین مال کلفٹن ، اوشن مال، لکی مال، لاہور کا پیکیجز مال، ایمپوریئم مال اسلام آباد کے سینتورس مال ، صفوا مال سمیت ملک بھر میں موجود تمام شاپنگ مال آج سے کھل جائیں گے اور عید کی شاپنگ بھرپور طریقے سے شروع ہوگئی۔ تاہم صوبائی حکومتوں نے شاپنگ مالز کو ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کی ہدایت کی ہے۔ تاجروں کی ایسوسی ایشن کے سربراہ عتیق میر نے سپریم کورٹ کے فیصؒے کو سراہا ہے۔

پاکستان میں یہ پہلی بار نہیں کہ سپریم کورٹ نے حکومت کی کسی پالیسی پر ازخود نوٹس لیکر فیصلہ دیا ہو۔ سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری اور جسٹس ثاقب نثار کے دور میں بھی حکومت کی پالیسی کے خلاف ازخود نوٹس لیئے جاتے رہے ہیں اور ان پر فیصلے آئے ہیں۔ جسٹس ریٹائرڈ افتخار چوہدری کے دور میں ازخود نوٹسسز کی تعداد کافی تھی اور کئی ریاستی معاملات میں عدالت مسلسل نگرانی کررہی تھی اور فیصلے جاری کررہی تھی۔

پاکستان میں شاپنگ مالز کھولنے کی اجازت تو دیدی گئی ہے لیکن اگر اس کے نتیجہ میں کرونا وائرس کے متاثرین کی تعداد بڑھی تو اس کی ذمہ داری کس کی ہوگی یہ تعین ہونا ابھی باقی ہے۔اب تک وفاقی حکومت کا موقف رہا ہے کہ کرونا کی وبا اپنی جگہ لیکن بھوک سے لوگوں کو مرنے بھی نہیں دیا جاسکتا۔ آج سپریم کورٹ نے بھی کم و بیش یہی موقف اپنایا ہے۔

پاکستان میں آج کرونا سے متاثرین کی تعداد بیالس ہزار سے زائد ہوچکی ہے تاہم اس بیماری سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد دنیا کے دیگر ممالک کے مقابلے میں کم ہے۔ ابتک نو سو افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔ حکومت نے جب سے لاک ڈاون میں نرمی شرو ع کی ہے اسوقت سے کرونا متاثرین کے اعداد و شمار میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں