سیلز ٹیکس کی شرح میں 5سے10فیصد تک کمی کی تجویز

اسلام آباد سے بزنس رپورٹر: وزیراعظم کی جانب سے قائم کی گئی اکنامک تھنک ٹینک نے بجٹ میں سیلز ٹیکس کی شرح میں پانچ سے دس فیصد تک کمی کی تجویز دیدی ہے۔ تھنک ٹینک کا کہنا ہے کہ عوام کی قوت خرید بڑھانے کے لیئے سیلز ٹیکس پر انحصار کم کرنا ہوگا

اس تھنک ٹینک میں سابق سیکریٹری خزانہ وقار مسعود، سابق گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر عشرت حسین، اعجاز نبی اور سلطان علی الانہ شامل ہیں۔

تھنک ٹینک کی طرف سے دی گئی اس تجویز کی وزارات خزانہ اور ایف بی آر مخالفت کررہے ہیں کیونکہ اس سے آئندہ سال کے ریونیو ہدف کو حاصل کرنے میں مشکل ہوگی۔ آئندہ سال کا ٹیکس ہدف اکیاون سو ارب روپے مقرر کیا جارہا ہے۔ جی ایس ٹی کا ٹیکس کلیکشن میں چالیس فیصد حصہ ہوتا ہے۔ ایف بی آر کا کہنا کہ کہ جی ایس ٹی کی شرح میں کمی سے ٹیکس کا ہدف حاصل کرنا مشکل ہوگا

دوسری طرف تھنک ٹینک کی رائے ہے کہ سیلز ٹیکس سے غریب اور متوسط طبقہ زیادہ متاثر ہوتا ہے اگر اس کی شرح کم کی جائے گی تو انہیں فائدہ ہوگا اس کے ساتھ ہی ان کی قوت خرید بھی بڑھے گی جو معیشت کا پہیہ تیز چلانے میں مددگار ثابت ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں