فردوس عاشق اعوان ہٹا دی گئیں، شبلی فراز اور لیفٹنںٹ جنرل ریٹائرڈعاصم سلیم باجوہ وزارت اطلاعات سنبھالیں گے

مولانا طارق جمیل اور میڈیا کا معاملہ فردوس عاشق اعوان کی وزارت لے بیٹھا۔ وزیراعظم نے فردوس عاشق اعوان کو وزارت اطلاعات سے ہٹا دیا۔ ان کی جگہ سابق ڈی جی آئی ایس پی آر لیفٹنٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باوجوہ اور مشہور شاعر احمد فراز کے صاحبزادے اور سینٹر شبلی فراز وزارت اطلاعات سنبھالیں گے

لیفٹنٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے اطلاعات ہوں گے۔ جبکہ سینٹر شبلی فراز وفاقی وزیر اطلاعات ہوں گے

حکومت کی طرف سے اطلاعات کی وزارت میں یہ دوسری بار تبدیلی ہے۔ اس سے پہلے فواد چوہدری کو وزارت اطلاعات سے ہٹایا گیا تھا۔

لیفٹنٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ کو جدید آئی ایس پی آر کا بانی کہا جاتا ہے۔ انہوں نے جنرل راحیل شریف کے دور میں آئی ایس پی آر کو جدید خطوط پر استوار کیا۔ انہی کے دور میں آئی ایس پی آر نے سوشل میڈیا پر توجہ دی اور عالمی پروپیگنڈے کا مقابلہ کیا۔

وزارت اطلاعات کی کارکردگی حال میں متنازعہ ہوگئی تھی جب وزیراعظم کے ٹیلی تھون کے بعد مولانا طارق جمیل کا تنازعہ کھڑا ہوگیا۔ وزارت اطلاعات اس تنازعہ کو ہینڈل نہ کرسکی جس کی وجہ سے سوشل میڈیا اور چینلز پر ٹیلی تھون اور اس کے مثبت اقدامات پیچھے چلے گئے۔

لیفٹننٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ سی پیک اتھارٹی چیئرمین ہیں۔

شبلی فراز سینٹ میں حکومت کی نمائندگی کرتے ہیں ۔ وہ مشہور شاعر احمد فراز کے صاحبزادے ہیں۔

فردوس عاشق اعوان پیپلز پارٹی دور میں بھی وزیراطلاعات تھیں۔ لیکن کابینہ ارکان سے اختلافات کی وجہ سے یوسف رضا گیلانی کے دور میں انہیں وزارت سے ہٹا دیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں